» English » فارسی
» Français » العربية
» русский » اردو
 
صفحه اصلی > كورسز > بی ۔ اے > ہیومینٹیز > عربی زبان و ادب  

کارشناسی معارف اسلامی ، زبان و ادبیات عرب

 

تعريف

معارف اسلامی ، زبان و ادبیات عرب کی کارشناسی کا کورد عبارت ھے اس مرحلہ سے کہ محصلین متعلقہ موضوع کے دروس سے آشنا ھو کر اختتام پر اس موضوع (Subject) سے متعلق سند (Degree) حاصل کرتے ھیں ۔

 

دورہ کے کلی اھداف

  ـ دینی (قدیم) متون کی ادبی تحلیل اور تجذیہ کرنے میں صلاحیت پیدا کرنا ؛

  ـ ادبیات عرب کے دائرہ مین مدرس کی تربیت ؛

  ـ دینی معارف ی نشر و اشاعت ، نحو اور ادبیات عرب کے استعمال کی تاریخ اور کلی ڈھانچہ کی شناسائی پر نظر کے ساتھ محققین کو آشنا کرنا ؛

  ـ تھیوری اور آخری صدیوں میں انقلاب سے متاثر تعلیمات حوزہ ارتباط اور مربوط یونیورسٹیوں میں مقدماتی آمادگی پیدا کرنا

  ـ البتہ عصر معلومات کے اقتضاء سے دین شناسی کے رجحان کے ساتھ ادبیات عرب میں تحقیقی بنیادوں کی طرف تحریک ؛

  ـ طلاب اور محققین کے اندر جذبہ تحقیق کو پروان چڑھانا ؛

  ـ صلاحیتوں کی شناخت اور با صلاحیت و آمادہ طلاب کو کارشناسی ارشد (M.A) کے کورس میں داخلہ لینے کے لئے تربیت کرنا؛

  ـ عربی بول چال پر عبور.

 

تعلیمی اھداف و مقاصد

  ـ طلاب کی اخلاقی اور معنوی بلندی کی راہ ھموار کرنا ؛

  ـ درسی متون اور عناوین کی تدوین میں معصومین (ع) کی روایات اور قرآنی معارف کی جانب خصوصی توجہ؛

  ـ لازم مھارتوں کے کسب کرنے کی راہ سے تدریس اور تحقیق کی توانائی ایجاد کرنا ؛

  ـ حدیثی اور تفسیر متون سے استفادہ کرنے کی توانائی بڑھانا؛

  ـ بقدر ضرورت علوم و معارف اسلامی کے سلسلہ میں معلومات عامہ حاصل کرنا ؛

  ـ موضوع کی مناسبت سے بقدر ضرورت فقہ ، اصول ، اور اسلامی عقاید کی شناخت؛

  ـ موضوع کے اصلی حدود کی اختصاص کے ذریعہ کم سے کم 33% واحدوں کی شناخت.

 

پورے کورس کی مدت اور اس کی کیفیت

  ـ اس کورس کے واحدوں کی کل تعداد 167/واحد درسی ھے کہ جو تخصصی دروس کے حوزوی دروس سے تلفیق کرنے کی بنا پر کم سے کم 5/سال کی مدت میں پیش کئے جاتے ھیں .

  ـ اس کا ھر واحد نظری 16/گھنٹہ کا اور عملی واحد 32/گھنٹہ کا ھوتا ھے.


 

 

درسی واحدوں کی تعداد اور اس کی کیفیت

کارشناسی معارف اسلامی اور ادبیات عرب کے کورس کے درسی واحدوں کی کل تعداد 167/واحد ھے کہ جس کے دروس کے حدود اور واحدوں کی تعداد مندرجہ ذیل ھے:

 

رديف

 دروس کے حدود

تعداد واحد

1

حوزوى دروس

32

2

عمومى دروس

21

3

مشترك دروس

54

4

تخصّصى دروس

60

          جمع كل

167

 

 

اهميّت اور ضرورت

دینی علوم کے منابع و ماخذ عام طور پر عتربی زبان میں ھیں اور ادبیات سے استفادہ ھوتے ھیں کہ اس میں تلاش و کوشش کرنے کی ضرورت ھے کہ جو ادبی تحلیل اور تلفیق (Combination) سے قابل حل نھیں ھیں اس لئے دینی حوزہ علمیہ میں ادبی فکر کو زندہ کرنے کے لئے علمی تحریک اور انقلاب کی ضرورت ھے گذشتہ ادبایت کہ جو دینی ماخذ خصوصاً قرآن کریم میں استفادہ ھوئے ھیں سے عرفی ذوق کا فاصلہ نا صرف بعض تعلیمات ست غفلت کا باعث بنا ھے بلکہ شبھات بھی ایجاد کر دیئے ھیں کہ ان کے نمونے فھم اعجاز قرآن میں تلاش کئے جا سکتے ھیں حوزہ علوم دینیہ میں سطحی فکر کی وجہ سے اس فن میں اغلاط اور دینی معارف کے سمجھنے کے طریقے اور استنتاج میں خلل بھی ھیں اس موضوع کی پیدائش اس ضمن میں کہ نسل گذشتہ اور حاضر سے ارتباط کے لحاظ سے ایک قدم ھو اور حوزہ علوم دینیہ کی راہ میں ادبی تھذیب کے لئے تحریک ھو اور علمی مکاتب و مدارس کی وسیع معالیت کی طرف توجہ کے ساتھ رقیب و معاند اور شبھوں نے اس سلسلہ میں پھلے سے کھیں زیادہ توجہ کو ضروری اور محسوس بنادیا ھے ۔

 

کردار اور توانائی

ادبی علوم کی تحصیل میں دینی تحقیقی میلان باعث ھوا ھے کہ متعلقہ موضوع درسی عناوین کی کی تدوین میں زمانہ اور رتبہ کے مقدم ھو نے کے اعتبار سے ادبی فھم اور تحلیل نے افھام کے دائرہ میں پھلے دائرہ میں ادبی علوم و ٹکنالوجی فنون اور نظری مباعث کو اصلی وزن دیا ھے ۔ اور مراتب بالا تر کے لئے مقدمہ سازی اور آشنائی دائرہ افھام میں (کارشناسی ارشد اور "Doctorate") میں اکتفا کرے اسی وجہ سے مھارت اور "تسلط" کی جانب توجہ عام طور پر "ادبی درک" میں نا اپنے ارتباط کے حودود میں نمایاں کر دیا ھے ۔


 

 

درسي عناوين:

 

الف) حوزوى دروس:

 

رديف

عنوان درس

تعداد

واحد

ساعت

ابتدائی ضرورت

توضيحات

جمع

نظری

عملی

1

صرف (1)

4

80

48

32

 

 

2

صرف(2)

3

64

32

32

صرف(1)

 

3

نحو (1)

3

48

48

-

صرف (2)

 

4

نحو (2)

5

96

64

32

نحو (1)

 

5

نحو(3)

5

96

64

32

نحو (2)

 

6

تجزيه و تركيب

2

64

-

64

نحو (3)

 

7

عبارت خوانى اور درك مطلب

2

64

-

64

نحو (3) و تجزیه وترکیب

 

8

ابتدائی اسلامى فلسفه 

1

32

-

32

 

 

9

قرآنی تعلیم کی روش

2

32

32

-

 

 

10

تبليغ کی روش

1

32

-

32

اسلامی نظریہ

 

11

ایران کی تاریخ اور اس کی ثقافت سے آشنائی

2

32

32

-

 

 

12

منطق مقدّماتى

2

32

32

-

 

 

 

جمع کل

32

672

352

320

 

 

 


 

ب) عمومى دروس:

 

رديف

عنوان درس

تعداد

واحد

ساعت

ابتدائی ضرورت

توضيحات

جمع

نظری

عملی

1

اسلامی نظریہ (1)

2

32

32

-

 

 

2

اسلامی نظریہ (2)      

2

32

32

-

اسلامی نظریہ (1)

 

3

صدر اسلام  کی تحليلى تاريخ

2

32

32

-

 

 

4

امام خمينى(ره) کا سياسى اور اجتماعى نظریہ  

2

32

32

-

اسلامی نظریہ (2)

 

5

فارسى ادبيات

3

48

48

-

 

 

6

جسمانی ورزش

2

32

32

-

 

 

7

اسلامى اخلاق

2

32

32

-

 

 

8

قرآن کی موضوعی تفسیر

2

32

32

-

تفسیر مقدماتی

 

9

تنظيم خانواده     

1

16

16

-

 

 

10

زبان خارجى       

3

48

48

-

 

 

 

جمع کل

21

336

336

-

 

 

 

یاد دھانی : عمومی دروس کے عناوین ثقافتی انقلاب کی اعلیٰ کمیٹی کے طے کردہ عناوین ھیں .


 

ج) دروس مشترك :

 

رديف

عنوان درس

تعداد

واحد

ساعت

ابتدائی ضرورت

توضيحات

جمع

نظری

عملی

1

نحو تكميلى

1

32

-

32

نحو (3)

 

2

علوم قرآن سے آشنايى

2

32

32

-

 

 

3

تفسير مقدّماتى

2

32

32

-

علوم قرآن سے آشنايى

 

4

موضوعى تفسير

2

32

32

-

اخلاق

 

5

تاريخ اور حديث کے ماخذ  سے آشنايى

2

32

32

-

علوم قرآن سے آشنايى

 

6

عقائد اسلامى (3)

2

32

32

-

اسلامی نظریہ(1)

 

7

عقائد اسلامى (4)

2

32

32

-

عقائد اسلامی (3)

 

8

اديان کی عمومى تاريخ (1)

2

32

32

-

 

 

9

اديان کی عمومى تاريخ (2)

2

32

32

-

اديان کی عمومى تاريخ (1)

 

10

تاريخ اسلام

2

32

32

-

صدر اسلام کی تحلیلی تاریخ

 

11

 اسلامى فرق و مذاهب سے آشنايى 

2

32

32

-

 

 

12

شيـعه شناسى

2

32

32

-

 اسلامى فرق و مذاهب سے آشنايى 

 

13

عرفان اسلامى سے آشنايى

2

32

32

-

 

 

14

اصول فقه

5

80

80

-

منطق و نحو (3)

 

15

علم فقہ سے آشنايى

2

32

32

-

 

 

16

فقه (1)

4

64

64

-

علم فقہ اور اصول فقه سے آشنایی

17

فقه (2)

4

64

64

-

فقه (1) و اصول فقه

 

18

فقه (3)

4

64

64

-

فقه (2)

 

19

منطق

4

64

64

-

منطق مقدماتی

 

20

فلسفه  اسلامى

4

64

64

-

اسلامی مقدماتی فلسفه 

 

21

روش تحقيق

2

48

16

32

 

 

 

جمع کل

54

896

832

64

 

 

 

 

 

                                     

د))معارف اسلامى، زبان و ادبيات عرب( کے خصّصى دروس

 

رديف

عنوان درس

تعداد

واحد

ساعت

ابتدائی ضرورت

توضيحات

جمع

نظری

عملی

1

صرف تكميلى

2

48

16

32

صرف (2)

 

2

نحو عالى (1)

4

80

48

32

تجزیه و ترکیب

 

3

نحو عالى (2)

4

80

48

32

تجزیه و ترکیب

 

4

نحو عالى (3)

2

48

16

32

تجزیه و ترکیب

 

5

نحو عالى (4)

2

48

16

32

نحو تکمیلی

 

6

تكميلى تجزيه و تركيب (1)

2

64

-

64

نحو عالی (1و2)

 

7

تجزيه و تركيب تكميلى (2)

2

64

-

64

علو م بلاغی کے ساتھ تکمیلی تجزیه وترکیب (1)

بلاغی نکات کی طرف بھی اشارہ ھوتا ھے تقریباً 10% قواعد و علوم بلاغی عامہ 50% آیات 30% روایات 10% اشعار

8

علوم بلاغى (1)

2

48

16

32

نحو عالی (1) علوم بلاغی سے آشنایی

علم معانی

9

علوم بلاغى (2)

2

48

16

32

نحو عالی (1) علوم بلاغی سے آشنایی

علم بیان و بدیع

10

زبان شناسى

2

32

32

-

صرف تکمیلی

 

11

لغت شناسى

2

32

32

-

صرف تکمیلی

عملی تخصصی موضوع ملاحظہ ھو

12

قرائت متون

2

64

-

64

نحو عالی (3)

سرعت سے پڑھنے کا کردار اور یاد کرتے وقت انتقال ملاحظہ ھو

13

تحليل ادبى متون

2

64

-

64

نحو عالی (4)علوم بلاغی (1)

20% حجم درس (استظهار) یعنی محل استعمال سے مخصوص ھوتا ھے

14

نهج البلاغه اور صحيفه سجاديه کی ادبى تحليل

2

48

16

32

تکمیلی تجزیه و ترکیب (1) و علوم بلاغی(1)

 

15

قرآن کی ادبى تفسير

2

32

32

-

تجزیه وترکیب تکمیلی (2)

ایک مذھب کے روائی خاص قرائن سے خالی ھونا موارد تائید کے علاوہ ھے لازمی ھے

16

قرآن کا ادبى اعجاز

2

32

32

-

تجزیه و ترکیب تکمیلی(2)

قرآن کے ادبی اعجاز کے مطالعہ کی شناسائی کی روش کی فعالیت مورد توجہ واقع ھوتی ھے

17

غريب القرآن و الحديث

2

32

32

-

تکمیلی تجزیه و ترکیب (1)

 

18

تاريخ ادبيات عرب (1)

2

32

32

-

تکمیلی تجزیه و ترکیب (1)

اصلی تکیہ تاریخی روش اور اس میں دخیل عناصر پر ھوتا ھے ( نہ شخصیات کے مانند عناصر پر تمرکز )

19

تاريخ ادبيات عرب (2)

2

32

32

-

تاریخ ادبیات عرب (1)

اصلی تکیہ تاریخی روش اور اس میں دخیل عناصر پر ھوتا ھے ( نہ شخصیات کے مانند عناصر پر تمرکز )

20

ادبيات معاصر

2

32

32

-

زبان شناسی

 

21

املاء و انشاء

2

64

-

64

ادبیات معاصر

تحریر اور نگارش کا طریقہ عصر حاضر کے طریقوں پر ھوگا

22

ادبيات نظم

2

48

16

32

تجزیه و ترکیب (2)

اس سطح میں قواعد کے استعمال پر توجہ کے ساتھ فصیح طور کے اشعار کی تحقیق ھوتی ھے

23

ادبيات عرب میں تحقیق کی روش

2

48

16

32

نحو عالی (3)

مدرسین کی پوری مدت میں تحقیقی محل کار کی طرف خاص توجہ کے ساتھ تقریباً 1/واحد ماخذ شناسی سے اختصاص رکھتا ھے

24

ادبيات عرب میں تدريس کی روش

2

64

-

64

تجزیه و ترکیب تکمیلی (1)

 

25

ترجمہ کے اصول اور طریقے (1)

2

48

16

32

نحو عالی (3)

ترجمہ کا محل کار قابل دید حجم کا حامل ھے

26

ترجمہ کے اصول اور طریقے (2)

2

48

16

32

ترجمہ کے اصول اور طریقے (1)

 

27

ترجمہ کے اصول اور طریقے (3)

2

48

16

32

ترجمہ کے اصول اور طریقے (1و2)

 

28

عربی بول چال

2

64

-

64

 

 

 

جمع کل

60

1392

 544

832

 

 

 

یاد دھانی: ان طلاب کے لئے جو ادبیات عرب کے موضوع کو تکمیل کرتے ھیں (ایک ترم کی مدت تک) کلاس شروع ھونے سے پھلے عربی بول چال کی کلاس رکھی جاتی ھے .