» English » فارسی
» Français » العربية
» русский » اردو
 
صفحه اصلی > خدمات اور سہولتیں  > خانوادہ کے امور  

طلاب اور خانوادہ کے تربیتی اور ثقافتی امور تک رسائی کے لئے مختلف تعلیمی اور سنی سطحوں میں مخاطبین پر نظر کرتے ہوئے نیز خانوادہ کی ثقافتی اور تربیتی اسباب پر دسترسی باعث ہوئی کہ ثقافتی اور تربیتی ادارہ اپنی ثقافتی اور قرآنی پروگراموں کو مختلف قالبوں میں اجراء کرنے کی کوشش کرے۔ طلاب کی بیویوں کا ثقافتی مرکز اور شہید بہشتی بلڈنگ میں نور الھدی نامی قرآن کا مرکز ،قرآنی مقابلے ، کتاب خوانی ، مذہبی عیدوں اور اہلبیت(ص)کی عزاداری سے متعلق مختلف مناسبتوں سے پروگرام ، بچوں اور نونہالوں کے لئے موضوعات اور قرآنی اشعار کی کتابوں کی فراہمی ، سافٹ ویئر کا ذخیرہ ، قرآنی سیڈیز کی تقسیم روخوانی اور روانخوانی کے دورہ وار جلسوں کا قرآن پڑھنے والوں کے درمیان انعقاد قومی انجمنوں کی حمایت اور شناسائی اور ثقافتی خدمات دینا اس ادارہ کے دیگر پروگرام ہیں ۔

ورزش  

ورزش ایک صحیح و سالم تفریح ہی نہیں ہےبلکہ ایک سالم انسان کی ضرورت بھی ہے ثقافتی اور تربیتی ادارہ ، تعلیمی دورے، ورزشی مقابلے ، بلڈنگوں کے ورزشی ہالوں کی توسیع اورانھیں بہتر طریقے سے آمادہ کرتا اور کوشش کرتا ہے تاکہ فوٹ بال ، تیراکی ، بدن سازی اور فوجی ورزش جیسے موضوعات کے تمام شائقین کے لئے ایک مناسب راہ ہموار ہو ۔

شہید بہشتی اپارٹمنٹ کا ورزشی ہال رنگارنگ ورزشی اسباب کے ساتھ دسیوں اپارٹمنٹ میں رہنے والے اور شہر کے دسیوں ساکن کی شرکت کا گواہ ہے ۔ طلاب اور ان کے بچوں اور ان کی بیویوں کا مختلف سن و سال میں استقبال ان ورزشی امر میں ان کی حقیقی ضرورت اور شوق کی حکایت کرتا ہے اب تک شہری اور ملکی پیمانہ پر ورزش کے موضوعات پر متعدد تعلیمی اور مقابلہ کا دورہ منعقد ہوا ہے اور ممتاز ورزش کرنے والوں کی شناسائی ہوئی ہے ۔

مقابلے

علم و ہنر کا سیکھنا اگر تجربہ کی کسوٹی پر تولا نہ جائے تو پھر علم قبول کرنے والے کی توانائی میں اضافہ نہیں ہو سکتا ہے صحیح مقابلہ اور علمی رقابت پر سکون اور عادلانہ ماحول میں توانائی کا اندازہ لگانے اور انجام شدہ تعلیمی کوششوں کی کامیابی کا بہترین معیار بھی ہے ۔ ثقافتی ادارہ قرآنی ، معارفی (کلچر سے متعلق ) کتاب خوانی ، ہنری وغیرہ کا مقابلہ منعقد کرکے طلاب کے بچوں اور بیویوں کو تشویق کرکے کوشش کرتا ہے کہ تعلیمی ادارہ کی فعالیتوں کےساتھ امور طلاب اور خانوادوں کے پروگراموں اور فعالیتوں کو مثمر ثمر بنانے کے لئےایک مناسب مکمِّل ہو ۔ یہ مقابلے خانوادہ کے درمیان پورے سال میں موسم اور دورہ کے عنوان سے منعقد ہوتے رہتےہیں ۔ اور منتخب افراد کی تشویق کرنے اور انھیں ابھارنے کے لئے نفیس انعامات بھی دیئے جاتے ہیں ۔ بچوں کا استقبال (حصہ لینا ) بالخصوص ڈرائنگ اور ہنر کے مقابلے میں اس پروگرام کو وسیع کرنے کی مناسب راہ ہموار کرتا ہے ۔

پیکنیک

سفر ، خالق اور مخلوقات کی شناخت کا ایک بہترین اور اہم ذریعہ ہے۔ ایران اسلامی حیرت انگیز سرزمین ہے کہ جس میں سیاحت اورمذہبی گردش کرنے کی کشش بھی پائی جاتی ہے مقدس مقامات کی زیارت اور مختلف صوبوں میں چاروں موسم میں آفاقی سیاحت ثقافتی اور تربیتی اغراض و مقاصد کے لئے ایک مناسب موقع ہے ۔ امام رضا علیہ السلام کے روضہ ٔمبارکہ کی زیارت عالم شیعیت کی تمنا ہے ۔ اس امام عالی مقام کی زیارت کا شوق شائقین کے لئے تعب و رنج کی راہ ہموار کر تا ہے اور دنیا کی تمام غربت کا غم و اندوہ امام رضا(ص) کی ضریح کے پاس ایک آن آنے میں برطرف ہو جاتا ہے آٹھویں امام کے روضہ اقدس کی سالانہ زیارت کا سفر ہر سال گرمی کے موسم میں ناقابل وصف و بیان شوق و ولولہ پیدا کرتا ہے اور یادگار رہ جاتا ہے دائمی طور سے طلاب محترم کا استقبال اور سہم کی محدودیت پر نظر کرتے ہوئے سالانہ ہر مدارس علمیہ کے لئے خاص سہم (کوٹہ)رکھا جاتا ہے تا کہ حضرت کے تمام عاشقین اس فیض سے بہرہ مند ہوں ۔ طلاب اور ان کے اہل و عیال کا توشہ اور یادگار زیارت کے دنوں سے ہی امور طلاب اور خانوادہ کے مرکز میں یہ شوق ہے اور اس اردو کے اجرا کرنے والوں کا شوق تمام زحمتوں کے باوجود دو چند ہو جاتا ہے ۔

اس کے علاوہ ایران کے تمام قابل دید اور مذہبی علاقوں میں ایک چند دنوں کا تفریحی سفر ، قومی اور سنی گروہوں کے قالب میں ادارہ کی ثقافتی اور تربیتی فعالیتیں پر انجام پاتی ہیں ۔

مطبوعات

امور طلاب اور خانوادہ کے مرکز کا ایک ہدف اور مقصد خانوادہ سے دو طرفہ اور واقعی رابطہ ہے کہ ان میں سے بعض شمیم مہر مطبوعات (خانوادوں سے مخصوص ) اور جوانوں (فرزندوں سے مخصوص ) کی نشر و اشاعت ہے یہ مطبوعات تمام مخاطبین کو دعوت عام دیتا ہے کہ صاحبان فکر و نظر ، شوق اور لگاؤ رکھنے والے یا دست بہ قلم ہیں اور یہ بھی چاہتے ہیں کہ اپنے ذخیروں سے دوسروں کو بھی فیضیاب کریں مرکز ان مطبوعات کی نشرواشاعت سے خالص اسلام محمدی(ص)اور مکتب اہلبیت(ص) کے کلچر سے خوانوادوں کی آشنائی اور اسلامی انقلاب کے اقدار اور ثقافت کی تبلیغ اسلام کی اصلی اور اہم ترین مرکز کے عنوان سے عالم اسلام میں اور مسلمان عورت ، بچے اور جوان کی کیفیت کی شناسائی قومی اور خاندانی حقیقتوں پر توجہ دیئے بغیر کرتا ہے۔

مرکز کے مختلف شعبوں کی خدمات اور پروگراموں کی اطلاع دینا ، تشویق ، خلاقیت ، قارئین کی توانائی اور مطبوعہ میں ان کے مطالب سے استفادہ ، فارسی زبان میں پڑھنے لکھنے کی مہارت میں اضافہ ، مناسب ثقافتی نتائج کا تعارف ، رہنمائی اور مشکلات کا حل ، مشورت دینا وغیرہ شمیم مہر رسالہ کا اہم عنوان ہے ۔

امداد و سلامتی کا شعبہ بھی ندائے سلامتی نامی رسالہ تربیتی اور مشاورتی اغراض کے تحت اپنے مخاطبین کے لئے نشر کرتا ہے ۔

ملاقاتیں  

مرکز امور طلاب اور خانوادہ کا ایک پروگرام طلاب محترم اور ان کے خانوادے سے نزدیک اور روبرو رابطہ رکھنا ہے تاکہ پروگرام بنانے اور اپنی پالیسی کو واقیعتوں اور خانوادوں کے واقعی مسائل کے پیش نظر دقیق اور عملی نطر کر سکے ۔ اس بنیاد پر  مرکز امور طلاب اور خانوادہ المصطفی ؐیونیورسٹی کے وائس چانسلر حجۃ الاسلام والمسلمین جناب اعرافی صاحب کی رہنمائی سے طلاب سے ملاقات اور خانوادوں کے درمیان حاضر ہونے کے سلسلہ میں خاص توجہ دیتا ہے ۔ یہ ملاقاتیں مرکز کے مدیر ، معاونین اور رہائشی آپارٹمنٹ کے مدیروں کی موجودگی میں انجام پاتی ہیں ۔ لیکن بعض ملاقاتوں میں المصطفی(ص) یونیورسٹی کے بڑے افسران (Managers)حضرات بھی ہوتے ہیں ۔

ثقافتی اور تربیتی ادارہ بامقصد نظم و ترتیب دیتا اور طلاب و خانوادہ میں ممتاز اور افاضل طلاب کی ترجیح کے ساتھ ان اقوام و ملل کے درمیان روحانی اور عاطفی رابطہ برقرار کرتا ہے جو مرکز سے کم رابطہ رکھتی ہیں اور مریضوں سے ملاقات میں اس بات کی کوشش کرتا ہے کہ ذخیرہ شدہ موضوعات سے متعلق مشکلات کے ضمن میں طلاب محترم کو قانع اور مطمئن کرنے والا جواب دے اسی طرح بعض اقوام سے گروہی شکل میں میٹنگیں ہوتی ہیں اور اس خانوادوں کی مشکلات کی محبت آمیز فضا میں تہہ دل سے بررسی اور تحقیق کی جاتی ہے ۔

خانوادہ کامعاون  

عالم مسافرت میں غیر ایرانی طلاب محترم کے خانوادوں کی زندگی ناگوار حالات سے دوچار ہوتی ہیں ۔ اور یہ مسئلہ تنظیم خانوادہ کو آفت سےدوچار کرتا اور تعلیم کی راہ میں ایک واقعی روکاوٹ بنتا ہے ۔ خانوادہ کا معاون ان خانوادوں سے ہمدردانہ ، دوستانہ اور گہرے روابط کے لئے ایک تجویز ہے تاکہ ان کی جسمی ، روحی ، ذہنی ، سماجی ، معاشی اور تربیتی مشکلات کو برطرف کرنے میں ایک موثر قدم ثابت ہو اور متعلقہ مسئولین کو مناسب معلومات دے کر ان کی مشکلات کو حل کرنے اور اس کے لئے تگ و دو کرنے میں ایک موثر قدم اٹھائے ۔ خانوادہ کا معاون ایک شخص ہے کہ جو کافی معلومات اور تجربوں کے ساتھ ایک بات کی کوشش کرتا ہے کہ خانوادوں سے گہرہ اور دوستانہ رابطہ بر قرار کرنے کی کوشش کرتا ہے  اور ان کی جسمی ، روحی ، سماجی اور معاشی وغیرہ صورتحال اور ان کی بیوی اور بچون کے حالات جان کر انھیں دور کرنے میں مدد کرتا ہے  یہ تجویز ، طلاب کے خانوادوں کی صورتحال کا جائزہ لینے جیسے اہداف، زندگی کے مشکلات ان کی ضرورت اور توانائی کی کیفیت اور صورتحال کی  مناسب اور دقیق اطلاع کو بھی شامل ہے ۔

خانوادوں کے پروگرام بنانے میں ان معلومات سے استفادہ ،کیفیت کی تحقیق اور سابقہ تجاویز کو اجراء کرنے والوں کی فعالیت بعض مشکلات کو روکنے اور انھیں برطرف کرنے اور ممکن حد تک ان کی ضرورتوں کو پورا کرنے کا ایک طریقہ ہے ۔ خانوادوں کے بارے میں ان کے اسباب اور موجودہ گنجائش جامعۃ المصطفی(ص)اورمرکز امور طلاب اور خانوادہ میں قابل استفادہ ہے معاونین اپنی ماہرانہ تحقیق کے نتیجے اور مشاہدات کو متعلقہ فارم میں درج کرتے اور مندرجہ ذیل رپورٹ اور معلومات کو تجویز کے ذمہ دار کی خدمت میں مسئولین اور ذمہ داروں کے فیصلہ کے لئے اپنی فعالیت کے نتائج کو پیش کرتے ہیں ۔

عالم اسلام کی خواتین کانفرنس  

ریسرچ اسکالر خواتین اپنے علمی اور اسلامی یونیورسٹی کے حدود میں مسلسل عالم اسلام کے موجودہ کسی ایک اصلی ترین مسئلہ یعنی عورت کی پہچان ، اس کا کردار اور  اس کے معاشرے اور خانوادے میں فرائض سے دوچار ہیں ۔ خانوادہ کا مرکز انسان کی سعادت کا محور ہے  نیز بیوی اور بچوں کی ترقی اور کامیابی عورت کی بلندی اور اس کی معلومات کی مرہون منت ہے لیکن اس حد میں بنیادی اور بھی لاجواب سوالات پائے جاتے ہیں کہ روزانہ اس کے علمی اور سماجی جوانب میں اضافہ ہی ہوتا جاتا ہے ۔ غیر ایرانی طلاب کی بیویاں اس لحاظ سے کہ جب وہ اپنے ملک واپس جائیں تو انھیں مختلف حالات اور شرائط میں اپنی پہچان ، حقیقت اور اپنے عقیدہ کا دفاع کرنا چاہئے  کیوں کہ وہ دوسروں سے کہیں زیادہ ایسے سوالات کا سامنا کرتی ہیں ۔ مرکز امور طلاب و خانوادہ نے اپنے پروگراموں میں جدید نظریات اور خلاقیت کی ایجاد کی اہمیت کے پیش نظر کوشش کی ہے کہ کچھ بحثوں کی تجویز کرکے تعلیم حاصل کرنے والوں کو ان موضوعات میں لکھنے اور غور و فکر کرنے کی تشویق کرے مرکز امور طلاب اور خانوادوں کی تربیتی اور ثقافتی ادارہ کی کوشش سے اب تک عالم اسلام کی خواتین کے ۷/عدد کانفرنس ہوچکی ہے اور ان کانفرنسوں میں غیر ایرانی طالبات اور طلاب گرامی کی ازواج نے دسیوں مقالے پیش کرکے فعال شرکت فرمائی ہے ان کانفرنسوں کا (Secret at ) سیکریٹیٹ پورے سال فعال ہے تاکہ ملک میں عورتوں کے امور میں فعال مراکز کی رائ حاصل کرکے محققین اور لکھنے والوں کی بیویوں اور طالبات کے لئے تعلیمی اور تحقیقی پروگراموں کو خواتین کے امور میں (Active) فعال محققین اور اساتذہ کی موجودگی میں اجراء کرے ۔ ہر دورہ کے موضوعات کی اطلاع عام دعوت نامہ کے ذریعہ محققین کو ہو جاتی ہے ۔