» English » فارسی
» Français » العربية
» русский » اردو
 
صفحه اصلي > معاونت اداری مالی 

مالی و اداری  تعاون کا شعبہ اور اسکی ذمہ داری

فیزیکلی اور مالی ڈھانچے کی فراہمی اور جامعۃ المصطفیکے اغراض و مقاصد کے تحقق کیلیے ضروری پشت پناہی

 سیاست اور حکمت عملی:

۱۔بےجا تشکیلات سے اجتناب کرتے ہوے مالی امور سے متعلق  خدمات کو استحکام بخشنا۔

۲۔ معاشی اور ذہنی لحاظ سے طلاب اور انکے خانوادے نیز فارغ التحصیل اور کار  کنان افراد کی آسودگی کا اہتمام اورنسبی رفاہ کے ذریعہ انکی رضایت مندی کی کوشش نیز جسمانی نشاط کیلیے صحیح وسالم ماحول کی  فراہمی اور معالجہ کی خدمات

 ۳۔ذمہ دار اور قانونی اداروں کی ہمامنگی اور کمک سے جانی و مالی ،فکری و سیاسی حقوق کی حفاظت و ضمانت

۴۔طالب علموں سے انکی تعلیمی و ثقافتی ،تربیتی و تحقیقی سطح کے اعتبار سے  خدمات لینا اور اسکے اندر ہماہنگی پیدا کرنا

۵۔اموال و املاک سے بہرہ مند ہونے کی ضمانت اورحکمت عملی

۶۔ملک اور بیرون ملک کے تقاضے اور اسٹنڈرڈ کے مطابق رہایشی فلیٹ اور علمی کالونی کی صورت میں ہاسٹل ،ورزش خانہ، ثقافتی مراکز، تعلیمی اداراے کے امکانات میں وسعت و ترقی

۷۔معاونت مالی کے اداروں کے قیام کے ذریعہ علماء اور طلاب کی علمی و ثقافتی فعالیت کو استحکام بخشنا (قرض الحسنہ ،بینک و۔۔۔۔)اور انکی بنیادی ضرورتوں کو فراہم کرنا۔

۸۔مالی حساب  و کتاب میں اصول و ضوابط اور قانون مندی کی صورت حال کو یقینی بنانا

۹۔تعلیمی و ثقافتی خدمات اور مقامی امکانات  جذب کرکے  آمدنی ا ور درآمد کے مواقع فراہم کرنا اور دیگرمالی مراکز کو استقلال و خودکفایی عطا کرنا۔

۱۰۔تمام اداری و مالی حمایت والی تنظیموں کے پروگراموں اور منصوبوں کو ایک صف میں لاکھڑ کرنا